انٹرنیشنل ہیومن رائٹس موومنٹ کے مرکزی صدر محمدناصراقبال خان، سیکرٹری جنرل محمدرضایڈووکیٹ ، آرگنائزراشفاق احمدکھرل ایڈووکیٹ سپریم کورٹ، سینئر نائب صدورناصرقریشی ،تنویرخان، مخدوم وسیم قریشی ایڈووکیٹ ،میاں محمداشرف عاصمی ایڈووکیٹ، ایڈیشنل سیکرٹری جنرل سلطان حسن بٹ ، نائب صدورنوشادحمید،ناصرچوہان ایڈووکیٹ ، شکیل اعوان، ممتازاعوان،صدربرطانیہ اقبال سندھو ،صدرسعودیہ سرفرازخان نیازی،صدرنیویارک محمدجمیل گوندل، صدرپنجاب محمدیونس ملک،صدرکراچی یونس میمن ،صدرکوئٹہ کامران خان بازئی،صدرٹیکسلاسردار منیراختر اورصدرشیخوپورہ عمران حیدرنے کہا ہے کہ دریندرمودی سے معصوم کشمیریوں کے خون کی ایک ایک بوند کاحساب لیاجائے گا،نہتے کشمیریوں کاخون ہولی کھیلنے کیلئے نہیں ہے۔بھارت جموں وکشمیرمیں بندوق اوربارود سے اقوام متحدہ کے چارٹر کی دھجیاں بکھیررہا ہے ۔اگرگجرات کے بیگناہ مسلمانوں کے قتل عام کے مرکزی کردارمودی کوتختہ دارپرلٹکادیاجاتا توآج جموں وکشمیر میں مسلمانوں کو نسل کشی کاسامنا نہ کرناپڑتا۔ہندوہرسال رنگ سے ایک دن جبکہ مسلمانوں کے خون سے روزانہ ہولی کھیلتے ہیں۔پتھروں سے بنے بھگوانوں کی پوجاکرنیوالے ہندوحکمرانوں کے سینے میںدل نہیں پتھر ہیں،انتہاپسندہندومعاشرہ انسانیت سے نفرت کی علامت بن کرابھرا ہے ۔دریندرمودی نے مسلمانوں کی آزادی سلب کر تے ہوئے ہندوستان کو ان کیلئے زندان اورقبرستان بنادیا۔اسیر کشمیری قیادت سمیت کشمیریوں کوفوری رہااورکرفیوختم کیاجائے۔شاہ سے زیادہ شاہ کے وفادار شاہ رخ خان نے جو کیا وہ کوئی مسلمان نہیں کرسکتا،اس طرح کے عناصر کے کالے کرتوت دیکھ کرمیرجعفر اورمیرصادق یاد آجاتے ہیں ۔وہ ایک اہم اجلاس سے خطاب کررہے تھے ۔مقررین نے مزید کہا کہ جوکوئی مودی کی پذیرائی کرے گادنیااورمحشرمیںبدترین رسوائی اس کامقدربن جائے گی ۔دنیاکی محض تجارت کیلئے بھارتی بربریت پرخاموشی ایک بڑاسوالیہ نشان ہے ۔انہوں نے کہا کہ اگر دوایٹمی ملکوں کے درمیان تصادم کی صورت میں بھارت بربادہوگیاتودنیا کس سے تجارت کرے گی ۔دنیاکی مقتدرقوتیں کشمیریوں کا پیمانہ صبر چھلک جانے کاانتظار نہ کریں ۔انہوں نے کہا کہ پاکستان میں ہندوبرادری سمیت ہراقلیت پوری طرح آزاد جبکہ بھارت میں مسلمانوں سمیت کسی اقلیت کوبنیادی حقوق اورمذہبی آزادی دستیاب نہیں ہے۔کشمیریوں کو عید اورجمعہ کی نمازیں اداجبکہ قربانی کرنے کی اجازت نہیں دی گئی جبکہ اسلامی جمہوریہ پاکستان میں ہندوبرادری کومذہبی آزادی حاصل ہے۔